نوازشریف کی ساڑھیوں کے بدلے مودی ’’را‘‘ کے ایجنٹ بھیج رہا ہے، نوازشریف کی خاموشی معنی خیز ہے: چودھری پرویزالٰہی

لاہور(27مارچ2016) پاکستان مسلم لیگ کے سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ نوازشریف بھارت کو ساڑھیاں اور ان کے بدلے میں نریندر مودی ’’را‘‘ کے ایجنٹ پاکستان بھیج رہا ہے لیکن اس پر نوازشریف کی خاموشی معنی خیز ہے، بلوچستان میں ’’را‘‘ کے کمانڈر کی گرفتاری پر فوج اور تمام خفیہ اداروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں، باب پاکستان پراجیکٹ 19سال بعد میں نے شروع کیا اور اس کی اہمیت کے پیش نظر تعمیر کا کام فوج کے سپرد کر دیا گیا، شہبازشریف باب پاکستان پر من گھڑت الزام تراشی کی بجائے عدالتی کمیشن بنائیں دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہو جائے گا۔ وہ یہاں اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ 23مارچ کو شہبازشریف نے میرے متعلق بے بنیاد باتیں کی ہیں، اگر انہیں احساس ہوتا کہ یہ ہمارا قومی ورثہ ہے، ساری قومیں اپنے ورثے کی حفاظت کرتی ہیں مگر انہوں نے اسے آج تک مکمل نہیں کیا، وہ ڈالر کی چمک کے پیچھے بھاگ رہے ہیں انہیں قومی ورثے کی اہمیت کا علم نہیں ورنہ تاخیری حربے استعمال نہ کرتے۔ انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ 1985ء میں ضیاء الحق نے شروع کیا تھا، گورنر پنجاب جنرل غلام جیلانی نے نوٹیفکیشن جاری کیا تھا اور 19سال بعد ہم نے اس منصوبے پر دوبارہ کام شروع کیا، اس دوران نوازشریف وزیراعلیٰ بھی رہے اور وزیراعظم بھی، شہبازشریف بھی چیف منسٹر رہے مگر ان کو قومی ورثے کا کوئی خیال نہیں آیا، 14اگست 2005ء کو پرویزمشرف اور میں نے اس منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا اور اس کی اہمیت کے پیش نظر اسے پاکستان آرمی کی انجینئرنگ کور کے سپرد کر دیا گیا اس منصوبے کے ڈیزائن کے مطابق لائبریری، میوزیم، 2 سکول، ریسٹورنٹس کا قیام اور ملحقہ سڑکوں کی کشادگی شامل تھی، اس وقت لاہور کے کور کمانڈر جنرل راشد محمود اور پنجاب حکومت کے وزیر کرنل (ر) شجاع خانزادہ (شہید) یہ منصوبہ دیکھ رہے تھے، شہبازشریف نے 2008ء میں میرے دوسرے منصوبوں کی طرح اس منصوبہ کو بھی بند کر دیا، 2012ء میں اس منصوبے کے حوالے سے میٹنگ بلائی گئی، پراجیکٹ ڈائریکٹر کرنل شبیر نے بریفنگ دی کہ اس منصوبہ پر کام ٹھیک شروع ہوا تھا، 27فیصد کام مکمل ہو چکا ہے، فوج کو ابتدائی طور پر جو 991ملین روپے مہیا کیے گئے تھے، اس میں 840ملین روپے خرچ کیے جا چکے ہیں۔ باقی جو 150ملین روپے بچے ہیں، وہ پنجاب حکومت کو واپس کر دئیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس میٹنگ کے بعد ایک بار پھر اس منصوبے کو پس پشت ڈال دیا گیا، ایسا لگتا ہے کہ اس منصوبہ کا فنڈز بھی اورنج ٹرین پر لگا دیا گیا ہے۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ شہبازشریف ہائیکورٹ کے جج کو مقرر کر لیں اور کمیشن بنا کر اس معاملے کی انکوائری کروا لیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شہبازشریف آج 8سال بعد ہسپتالوں اور سکولوں کا دورہ کر رہے ہیں نہ انہوں نے ہسپتالوں کو کچھ دیا اور نہ سکولوں کو، سارے سسٹم کا بیڑہ غرق کر کے ڈاکٹروں کو معطل کر رہے ہیں، لیپ ٹاپ دینے سے تعلیم عام نہیں ہوتی۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ پاکستان کو کمزور کرنے کیلئے را کے ایجنٹ نہ جانے کس کس جگہ بیٹھے ہیں۔ میٹرو بس اور اورنج لائن کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کو پتہ ہونا چاہئے کہ اس کی پہلی ترجیح کیا ہے، لاہور کی ایک کروڑ کی آبادی یا پنجاب کی باقی 8کروڑ، شہبازشریف ڈالر کی چمک کے پیچھے بھاگ رہے ہیں، پنجاب حکومت کا کام چلانے کیلئے پہلی حکومت نے 10کوٹھیاں کرائے پر لے رکھی تھیں، ہم نے ایک نئی بلڈنگ بنا دی جس میں تمام دفاتر ایک چھت تلے جمع کیے۔

Photo CPE 01 {Mar27-16}

urdu-download

Share