Saturday , February 4 2023
Breaking News
Home / Featured / مولانا مطیع الرحمن نظامی کی پھانسی غیرانسانی اور غیر قانونی ہے: چودھری شجاعت حسین

مولانا مطیع الرحمن نظامی کی پھانسی غیرانسانی اور غیر قانونی ہے: چودھری شجاعت حسین

شہید نے کئی بار عوامی لیگ کو ہرایا، 1971ء میں محب وطن شہری کا کردار ادا کیا، حکومت پاکستان نے بے حسی کا مظاہرہ کیا ہے

لاہور(12مئی2016) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے بنگلہ دیش جماعت اسلامی کے امیر مولانا مطیع الرحمن نظامی کو پھانسی دئیے جانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حسینہ واجد حکومت کا یہ اقدام غیرانسانی ہی نہیں غیر قانونی بھی ہے، مولانا مطیع الرحمن نظامی بنگلہ دیش کے پرانے اور تجربہ کار پارلیمنٹرین تھے، وہ متعدد مرتبہ عوامی لیگ کے مقابلہ میں بھاری اکثریت سے جیتے اور بنگلہ دیش کے وفاقی وزیر بھی رہ چکے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اگر 1971ء میں مولانا مطیع الرحمن نظامی نے عوامی لیگ اور مکتی باہنی کا ساتھ نہیں دیا تھا تو یہ کوئی جرم نہیں تھا، مشرقی پاکستان پر اس وقت پاکستان کی قانونی عملداری قائم تھی اور پوری دنیا اس کو تسلیم کرتی تھی۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ ایک محب الوطن شہری کی حیثیت سے مولانا مطیع الرحمن نظامی کو یہ حق حاصل تھا کہ وہ پاکستان کو بچانے کیلئے شروع کیے گئے فوجی آپریشن کی حمایت کریں اور اس کے ساتھ تعاون کریں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان نے مطیع الرحمن کیس میں بڑی بے حسی کا ثبوت دیا اور ان کی پھانسی رکوانے کیلئے کوئی سنجیدہ کوشش نہیں کی۔

urdu-download

Check Also

Shehbaz Sharif is sabotaging the national solidarity atmosphere, he has also destroyed economy, he is also responsible for ruining law and order: Ch Parvez Elahi

FIA and police have been given task of crushing political opponents, arrest of Sh Rasheed …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *