عینک لگا کر دیکھنا ہو گا کہ الیکشن کب ہونگے، شہباز، نوازشریف کے بغیر زیرو ہیں: چودھری شجاعت حسین

نوازشریف کا نام عدالتی حکم پر ای سی ایل میں ضرور ڈالنا چاہئے، میرا اور پرویزالٰہی کا احتساب تو جرنیلوں نے کیا تھا

ہماری جماعت کے وزیراعلیٰ بلوچستان کو تمام جماعتوں نے اعتماد کا ووٹ دیا اس لیے وہاں سینیٹ کے سب امیدوار آزاد ہیں: پھولنگر میں رانا نثار کیلئے فاتحہ خوانی کے بعد میڈیا سے گفتگو

لاہور(15فروری2018) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین رانا محمد حیات ایم این اے کے والد اور سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال خان کے چچا رانا محمد نثار کے انتقال پر تعزیت کیلئے ان کی رہائش گاہ پھول نگر گئے۔ ڈاکٹر عظیم الدین زاہد لکھوی بھی ان کے ہمراہ تھے۔ اہل خانہ سے تعزیت اور فاتحہ خوانی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ عام انتخابات کب ہوں گے ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہو گا، عینک لگا کر دیکھنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف کا احتساب ایک ریٹائرڈ جج کر رہا ہے جبکہ میرا اور پرویزالٰہی کا احتساب تو جرنیلوں نے کیا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر عدالتوں نے نوازشریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیا تو پھر عملدرآمد ضرور ہونا چاہئے، ہمارا نام بھی ای سی ایل میں رہا ہے، نگران حکومت کیلئے ابھی تک کوئی مشاورتی عمل شروع نہیں ہوا اور نہ ہی نگران حکومت کیلئے کوئی نام سامنے آیا ہے۔ انہوں نے مختلف سوالات کے جواب میں کہا کہ نوازشریف آئندہ الیکشن میں ہوں گے یا نہیں اس کا انحصار عدالتی فیصلے پر ہے، نوازشریف کو عدالتوں کے وقار کا خیال رکھنا چاہئے۔ بلوچستان کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو کا تعلق ہماری پارٹی سے ہے، تمام سیاسی پارٹیوں نے انہیں اعتماد کا ووٹ دیا اس لیے وہاں سینیٹ کیلئے سب آزاد امیدوار کے طور پر الیکشن لڑ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ وزیراعظم وہی ہو گا جسے اللہ تعالیٰ عزت اور کامیابی دے، شہبازشریف نوازشریف کے بغیر زیرو ہیں ان کا سیاست میں نوازشریف کے بغیر کوئی رول نہیں، سینیٹ میں پاکستان مسلم لیگ کے امیدوار کامل علی آغا ہیں اور دوسری جماعتوں سے تعاون کیلئے رابطے جاری ہیں۔

Share