Saturday , July 2 2022
Breaking News
Home / Featured / نوازشریف کی خواہش پر جاتی عمرا کا تحصیلدار چیف جسٹس سپریم کورٹ نہیں لگایا جا سکتا: چودھری شجاعت حسین

نوازشریف کی خواہش پر جاتی عمرا کا تحصیلدار چیف جسٹس سپریم کورٹ نہیں لگایا جا سکتا: چودھری شجاعت حسین

عدلیہ کو کمزور اور تنقید کا نشانہ بنانے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں، چیف جسٹس بڑے پن کا مظاہرہ کر رہے ہیں

لاہور/اسلام آباد(21فروری2018) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے ایک بیان میں کہا ہے کہ عدلیہ کو کمزور اور تنقید کا نشانہ بنانے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں، انہیں شاید یہ معلوم نہیں کہ سپریم کورٹ پارلیمنٹ کے کسی بھی فیصلے کو رد کر سکتی ہے جو آئین کے بنیادی ڈھانچے کے خلاف ہو، آئین کیا ہے اس کی تشریح اسی آئین کے مطابق سپریم کورٹ نے ہی کرنا ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس کا بڑا پن ہے کہ وہ نااہل اور تھرڈ گریڈ کے لوگوں کی احمقانہ زبان برداشت کر رہے ہیں، نااہل افراد حد سے بڑھ رہے ہیں، یہ تو ہو نہیں سکتا کہ نوازشریف کی خواہش کی تکمیل کرتے ہوئے جاتی عمرا کے تحصیلدار کو سپریم کورٹ کا چیف جسٹس لگا دیا جائے۔

Check Also

Today a very good decision given by the Supreme Court, what we wanted has been accepted: Ch Parvez Elahi

The atmosphere created inside the court should also maintained outside the court, this is democracy. …

Leave a Reply

Your email address will not be published.