چودھری شجاعت حسین، پرویزالٰہی سے یورپی یونین کے 8 رکنی وفد کی ملاقات

مسلم لیگی قائدین نے 2013ء کے الیکشن میں آر اوز کے ذریعہ دھاندلی کی روشنی میں آئندہ شفاف انتخابات کیلئے تجاویز دیں

انتخابات کے حوالے سے سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال، ملاقات میں سینیٹر کامل علی آغا، ڈاکٹر خالد رانجھا، مونس الٰہی، سالک حسین اور رضوان ممتاز علی بھی موجود تھے

لاہور(25فروری2018) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین اور سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی سے یورپی یونین کے آٹھ رکنی وفد نے یہاں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ مسلم لیگی قائدین نے 2013ء کے الیکشن میں آر اوز کے ذریعہ دھاندلی کی روشنی میں آئندہ صاف و شفاف الیکشن کیلئے تجاویز دیں۔ ملاقات میں پارٹی رہنما سینیٹر کامل علی آغا، ڈاکٹر خالد رانجھا، مونس الٰہی، سالک حسین اور رضوان ممتاز علی بھی موجود تھے۔ چودھری شجاعت حسین اور چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ 2013ء کا الیکشن آر اوز کا الیکشن تھا، 22 سیاسی جماعتوں کا یہی موقف تھا اور انہوں نے اس پر اعتراض بھی کیا۔ انہوں نے امید ظاہرکی کہ اگلے انتخابات کیلئے یورپی یونین کے الیکشن آبزرویشن مشن کی اہمیت اور افادیت سے اتفاق کرتے ہوئے الیکشن کمیشن آف پاکستان اور دفتر خارجہ ان سے بھرپور تعاون کریں گے اور سہولیات دیں گے۔ وفد کے ارکان نے مسلم لیگی قائدین سے آئندہ جنرل الیکشن کے حوالے سے سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ یورپی یونین کا وفد پاکستان کی سیاسی جماعتوں کے سربراہوں سے ملاقات کر رہا ہے اور ان انتخابات کے حوالے سے ان کے خیالات کو جاننا چاہتا ہے اور وہ جنرل الیکشن سے قبل ایک رپورٹ جاری کرے گا جس میں سربراہوں کے خیالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے سیاسی حالات کا جائزہ پیش کیا جائے گا۔ وفد نے کہا کہ یہ ہمارا معمول ہے اور 2002ء، 2008ء اور 2013ء کے جنرل الیکشن پر بھی ہماری رپورٹ شائع ہو چکی ہے۔ یورپی یونین کے وفد میں مسٹر نکولائی پاس، مس این وان ہوٹ، مسٹر جین کوسٹے ڈوٹ ، مسٹر ہانس ویبر، مس ہانا تھریسا رابرٹس ، مسٹر کولم ونسنٹ فاہے ، مسٹر پاول کرسٹوف جیورک زیک، سوانٹے ٹورنی ینگروٹ  شامل تھے۔

Share