کشمیر میں بھارتی مظالم کیخلاف او آئی سی کا ہنگامی اجلاس بلایا جائے: چودھری شجاعت حسین

خیبرپختونخواہ کی سابق ایم پی اے رفعت اکبر سواتی، منظور احمد، علامہ شعیب، حسین طوری، شاہ خال سمیت ن لیگ اور دیگر جماعتوں کے رہنما پاکستان مسلم لیگ میں شامل

حکومت اپنا کام کرنے کی بجائے سو رہی ہے: سابق وزیراعظم، کے پی کے میں پارٹی کو مضبوط اور فعال بنائیں گے: طارق بشیر چیمہ، محبوب جان، وجیہہ الزمان اور دیگر کا خطاب

لاہور(03اپریل2018) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ کشمیر میں بھارتی مظالم کیخلاف فوری طور پر او آئی سی کا ہنگامی اجلاس بلایا جائے، افسوس کہ حکومت اپنا کام کرنے کی بجائے گہری نیند سو رہی ہے۔ وہ خیبرپختونخواہ سے ن لیگ، قومی وطن پارٹی اور دیگر جماعتوں کے متعدد رہنماؤں کی پاکستان مسلم لیگ میں شمولیت کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ شمولیت اختیار کرنے والوں میں محترمہ رفعت اکبر سواتی سابق ایم پی اے، تحریک انصاف کے رہنما علامہ محمد شعیب، سید محمود، محمد شاہ، ناصر خان، منظور احمد خان جنرل سیکرٹری ن لیگ چارسدہ، شاہ خال چارسدہ قومی وطن پارٹی، کرم ایجنسی سے قومی اسمبلی کے امیدوار کپتان حسین طوری اور ان کے بہت سے ساتھی اور کارکن شامل ہیں۔ اس موقع پر طارق بشیر چیمہ، محبوب اللہ جان، وجیہہ الزماں، علامہ شعیب اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ تمام مقررین نے چودھری شجاعت حسین اور چودھری پرویزالٰہی کی قیادت پر میں پارٹی کو آگے لے جانے کے عزم کا اظہار کیا۔ چودھری شجاعت حسین نے مزید کہا کہ 2002ء سے 2007ء تک پاکستان مسلم لیگ کے دور میں باقاعدگی کے ساتھ وفود کشمیر جاتے تھے، کشمیر کاز کو جتنی فوقیت ہمارے دور میں ملی اس کی مثال نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کی کوئی خارجہ پالیسی نہیں، یہی وجہ ہے کہ پاکستان بیرونی دنیا سے رابطے میں نہیں اور نہ ہی کشمیر کے معاملے پر کوئی واضح پالیسی بنائی ہے، نوازشریف دور میں کشمیر کاز کو بہت نقصان پہنچا ہے، انہیں کشمیر کی نہیں مودی کی زیادہ فکر ہے، یو این او کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کو ان کا حق دیا جائے، پاکستان مسلم لیگ کشمیریوں کی تحریک آزادی میں مکمل حمایت کا اعلان کرتی ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے وجیہہ الزمان کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وجیہہ کے معنی خوبصورت، بہادر اورنڈر انسان کے ہیں اور محبوب اللہ جان تو ویسے ہی جان ہیں، ہمیں ایسے ہی لوگوں کی ضرورت ہے جن کی سوچ میں پاکستانیت ہو اور پاکستان کا درد ہو، جب بھی اسلام اور پاکستان کی بات آئے گی تو سب کچھ بھول کر صرف اسلام اور پاکستان کا سوچا جائے گا، یہ سلسلہ کے پی کے سے شروع ہوا اور آگے جائے گا اور اس کا سہرا بھی ابتدا کرنے والوں کے سر ہو گا، اب ہم نے صرف پاکستان مسلم لیگ کو فعال کرنا ہے اور کوئی ن، ق، ل نہیں صرف پاکستان مسلم لیگ کہنا ہے اور پاکستان مسلم لیگ کا مطلب یہ ہے کہ یہ اسلام کے ساتھ، ملک کے ساتھ اور پاکستانیت کے ساتھ ہمیشہ پیار کریں گے، ہم تو یہ کہیں گے کہ آپ کسی بھی پارٹی سے ہوں بے شک امام مسجد بھی ہوں آپ کا ذہن مسلم لیگی ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ یوتھ اور ایم ایس ایف کے دوستوں کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں جواتنی بڑی تعداد میں یہاں تشریف لائے۔ پارٹی کے سیکرٹری جنرل طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ سیاست میں اتار چڑھاؤ آتا رہتا ہے، انسان وہی ہے جو مشکل وقت میں بھی ساتھ دے۔ محبوب اللہ جان اور وجیہہ الزمان صاحب کے آنے اور سب کے لگن سے کام کرنے سے کے پی کے میں پنجاب سے بھی مضبوط جماعت بن جائے گی، ن لیگ کا کردار آپ کے سامنے ہے، ملک کے خلاف سازش برداشت نہیں کی جا سکتی۔ رفعت اکبر سواتی نے کہا کہ چودھری شجاعت صاحب کی قیادت میں پاکستان مسلم لیگ واحد جماعت ہے جہاں عورتوں کو بھی ان کا مقام حاصل ہوتا ہے، چودھری صاحب سے ہماری فیملی کے دیرینہ تعلقات ہیں، طارق خان سواتی جو منسٹر بھی رہ چکے ہیں ہماری تیسری پشت کا تعلق بھی پاکستان مسلم لیگ سے ہی ہے۔

Share