نوازشریف، مودی اور تمام پاکستان دشمن ایک پیج پر ہیں: چودھری پرویزالٰہی

عوام اپنے بچوں کا مستقبل بچانے کیلئے 25 جولائی کو ملک دشمن ن لیگیوں کو ہمیشہ کیلئے سیاست سے باہر کر دیں: مشترکہ جلسہ سے خطاب

لاہور(23جولائی2018) پاکستان مسلم لیگ کے سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ نوازشریف، نریندر مودی اور تمام پاکستان دشمن ایک پیج پر ہیں، عوام اپنے بچوں کا مستقبل بچانے کیلئے 25 جولائی کو ملک دشمن ن لیگیوں کو ہمیشہ کیلئے سیاست سے باہر کر دیں۔ وہ این اے 69 میں پاکستان مسلم لیگ اور تحریک انصاف کے بہت بڑے مشترکہ اختتامی جلسہ سے خطاب کر رہے تھے۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ وقت کی کمی کے باعث انتخابی مہم ٹھیک نہیں چل سکی، عوام 25 جولائی کو سوچ سمجھ کر ووٹ کاسٹ کریں، کسی ایسے شخص کو ووٹ نہ دیں جو آپ اور آپ کے بچوں کا مستقبل تباہ کر دے۔ انہوں نے نوازشریف کے ملک دشمن بیانیہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی اور نوازشریف کا یکساں ملک دشمن بیانیہ اتفاق نہیں، اپنی کرپشن اور چوری میں سزا کے بعد نوازشریف کا جیل سے بھی یہی بیانیہ ہے، قوم سے دشمنی کرنے اور قومی اداروں کو گالیاں دینے والے کس منہ سے قوم سے ووٹ مانگ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ جعلی پولیس مقابلوں کی بانی ہے، انہوں نے ہر جگہ جرائم پیشہ لوگوں کی سرپرستی کی اور تحفظ دیا بلکہ پولیس کو ان کے ماتحت کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کیلئے جانیں قربان کرنے والے شہیدوں کا ہم پر فرض ہے کہ ہم اب کوئی غلطی نہ کریں، عوام زیادہ سے زیادہ تعداد میں گھروں سے نکلیں اور ہمیں ووٹ دیں تاکہ عوام کی مزید خدمت کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ شریفوں نے جو کچھ کرنا ہے اب جیل میں ہی کرنا ہے۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ ہم نے اپنی 5 سالہ حکومت میں عوامی فلاح و بہبود اور ملکی ترقی کیلئے ایسے تاریخی اور مثالی کام کیے جن کی آج بھی ہر طرف سے تعریف کی جا رہی ہے، ن لیگ والوں نے اہل گجرات سے بھی دشمنی کی لیکن انشاء اللہ ہم یہاں انجینئرنگ یونیورسٹی، کینسر ہسپتال بنانے کے علاوہ موٹروے سے بھی ملائیں گے اور اپنے تمام نامکمل منصوبے مکمل کریں گے۔ پی ٹی آئی کے پی پی 31 سے امیدوار چودھری سرور سلیم جوڑا اور میاں عمران مسعود نے بھی جلسہ سے خطاب کیا جبکہ سٹیج پر چودھری اعجاز شاہدولہ، چودھری صفدر ممتاز سندھو، میاں ہارون مسعود، چودھری اظہر تیل والا، حاجی ریاض احمد، ظہور ساہی، تجمل شاہ، چودھری اظہر اقبال، مظہر نت، صاحبزادہ عتیق الرحمن اور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

Share