پرویزمشرف کو سزا سے بارڈر پر جان کا نذرانہ پیش کرنے کیلئے کھڑے ہر سپاہی کو دکھ ہوا ہے: چودھری شجاعت حسین

عوام ملک کے محافظوں کی قربانیاں یاد رکھیں، پاک فوج کے خلاف پراپیگنڈہ سے دشمن ملک کو ہی فائدہ پہنچتا ہے

لاہور(18دسمبر2019) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ پرویزمشرف کو سزا سے بارڈر پر جان کا نذرانہ پیش کرنے کیلئے کھڑے ہر سپاہی کو دکھ ہوا ہے، پاک فوج کے سابق سپہ سالار جنرل پرویزمشرف کے علاوہ ہمیں فوج کے اس سپاہی کے احساسات و جذبات کی بھی تشویش ہونی چاہئے جو مادرِوطن کی حفاظت کیلئے یا سیاچن سمیت ہر بارڈر پر کھڑا دشمن فوج کی ہر چال کا مقابلہ کر رہا ہے اور اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہا ہے، اس بات کا بھی خیال کرنا چاہئے کہ دور دراز کے علاقوں میں اپنے فرائض انجام دیتے ہوئے جب اسے پتہ چلے کہ اس کے سپہ سالار کو غدار کہا جا رہا ہے تو اس پر کیا بیتے گی، کسی بھی ملک کا آرمی چیف آسانی سے نہیں بنتا۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ جنرل مشرف ہوں یا کوئی بھی فوجی، جنرل کے عہدے تک پہنچنے کیلئے قابلیت، احساسات اور ملک و قوم سے محبت کے جذبات اس میں کوٹ کوٹ کر بھرے ہوتے ہیں، 1947ء سے اب تک ہزاروں مثالیں ملتی ہیں کہ ہمارے فوجی جوانوں نے ملک و قوم کی خاطر اپنی جانیں قربان کیں اور وطن عزیز کی حفاظت کی۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ اپنی جھوٹی اور جعلی قابلیت کی بنیاد پر عوام کو گمراہ کر رہے ہیں، اپنے ڈرائنگ رومز اور ٹی وی شوز میں بیٹھ کر مباحثوں کے دوران فوج کے خلاف اپنی جھوٹی قابلیت کو اجاگر کرنے کی کوشش کرتے ہیں، مشرف نے دو جنگیں لڑیں آج جو لوگ ان کے خلاف غداری کا واویلا کر رہے ہیں اِن سب نے اُن سے حلف لیا، عوام کو گمراہ کن لوگوں سے ہوشیار رہنا چاہئے اور اپنے محافظوں کو اس طرح کے جھوٹے لوگوں سے محفوظ رکھنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے منفی پراپیگنڈے سے صرف اور صرف ہمارے دشمن کو فائدہ ملتا ہے جو اس کا بھرپور فائدہ اٹھا رہا ہے۔

 

Share