کورونا سے لڑنے کے ساتھ ساتھ بچنا اور دوسروں کو بچانا ہے: چودھری شجاعت حسین

پانچ ممالک امریکہ، انگلینڈ، فرانس، اٹلی اور سپین 80فیصد کورونا وائرس سے متاثر ہیں، 10 فیصد دیگر یورپین ممالک اور 10 فیصد باقی دنیا میں ہے

کورونا سے متعلق پاکستان میں طرح طرح کی افواہیں پھیلائی جا رہی ہیں، یہ اللہ کی طرف سے آزمائش ہے، زیادہ سے زیادہ استغفار اور اپنے علاقوں میں مستحقین کی خوب مدد کریں

لاہور(14اپریل2020) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ کورونا سے متعلق پاکستان میں طرح طرح کی افواہیں پھیلائی جا رہی ہیں حالانکہ حقیقت یہ ہے کہ 80 فیصد کورونا وائرس سے پانچ بڑے ممالک متاثر ہیں جن میں امریکہ، انگلینڈ، فرانس، اٹلی اور سپین شامل ہیں، 10 فیصد یورپین ممالک اور 10 فیصد باقی دنیا میں ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے تجویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان پانچ ممالک کو چاہئے کہ وہ دوسروں کی بجائے اپنے اوپر دھیان دیں اور اب تک جس انداز اور معیار سے چل رہے تھے کہ کس کے پاس کتنا اسلحہ اور کتنے میزائل ہیں اس کو تبدیل کریں، ان کو اب یہ یقین کر لینا چاہئے کہ یہ دنیاوی چیزیں ان کو نہیں بچا سکتیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ پانچ بڑے ممالک اپنے فلاحی سٹیٹس کو بحال کریں اور جس سمت کی طرف چل رہے ہیں اس کو روک لیں، وہ بے تحاشہ پیسہ جو اپنے دفاعی سسٹم پر خرچ کرتے ہیں اس کو ہیلتھ سیکٹر پر خرچ کریں تو بہت سے مسائل حل ہوجائیں گے، دنیا میں دولت اور طاقت کے ترازو کا معیار بدل چکا ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ کورونا کے ساتھ لڑنے کا لفظ بولنے کی بجائے اس سے بچنے اور دوسروں کو بچانے کا لفظ کہنا زیادہ عقلمندی ہو گی، یہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے آزمائش ہے اس میں سب زیادہ سے زیادہ استغفار اور اپنے اپنے علاقوں میں مستحق لوگوں کی نشاندہی کر کے ان کی خوب مدد کریں۔

Share