محکمہ صحت کی کارکردگی پر تشویش ہے، مریضوں نے آج تک کبھی جلوس نہیں نکالا: چودھری پرویزالٰہی

پنجاب اسمبلی کا اجلاس 8 مئی کو بلانے کا فیصلہ، اجلاس میں وزیر قانون راجہ بشارت، ڈپٹی سپیکر ڈپٹی دوست مزاری، اویس لغاری، ندیم کامران، سمیع اللہ خان، احمد علی اولکھ، ساجد بھٹی، محمد معاویہ، خواجہ سلمان رفیق، امین ذوالقرنین، نذیر چوہان، سیکرٹری اسمبلی محمد خان بھٹی اور عنایت اللہ لک شریک تھے

لاہور(یکم مئی2020) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے پنجاب اسمبلی کا اجلاس 8مئی بروز جمعتہ المبارک دوپہر 2 بجے طلب کر لیا ہے۔ سپیکر چودھری پرویزالٰہی کی زیرصدارت آل پارٹی خصوصی پارلیمانی کمیٹی کا ویڈیو لنک پر اجلاس منعقد ہوا جس میں صوبائی وزیر قانون محمد بشارت راجہ، ڈپٹی سپیکر ڈپٹی دوست محمد مزاری کے علاوہ ارکان اسمبلی سردار اویس لغاری، ملک ندیم کامران، سمیع اللہ خان، احمد علی اولکھ، ساجد احمد خان بھٹی، محمد معاویہ، خواجہ سلمان رفیق، امین ذوالقرنین، نذیر چوہان، سیکرٹری اسمبلی محمد خان بھٹی اور عنایت اللہ لک شریک ہوئے۔ چودھری پرویزالٰہی نے محکمہ صحت کی کارکردگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قرنطینہ سنٹر میں مقیم مریضوں نے کبھی جلوس نہیں نکالا، لاہور ایکسپو سنٹر میں موجود مریض بطور احتجاج قرنطینہ سے باہر آ گئے جو کہ محکمہ صحت کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ انہوں نے اجلاس کو بتایا کہ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے حفاظتی اقدامات کو مدنظر رکھتے ہوئے پنجاب اسمبلی کا اجلاس بلایا گیا ہے، ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ حفظان صحت کے اصولوں پرعمل کریں، اگر خدانخواستہ کسی کو بھی یہ وائرس لگ گیا تو دوسرے ارکان بھی اس سے متاثر ہو سکتے ہیں لہٰذا ہاؤس کی سرپرستی کی ذمہ داری کو مدنظر رکھتے ہوئے میرا یہ فرض ہے کہ تمام ارکان کی صحت کا خیال رکھوں، مشاورتی اجلاس میں جو ایس او پیز طے کیے گئے ہیں ان پر تمام جماعتیں عمل کریں۔ اجلاس میں باہمی مشاورت سے فیصلہ کیا گیا کہ تمام جماعتیں اپنے اپنے ارکان کا کورونا ٹیسٹ کروائیں اسی طرح پنجاب اسمبلی کے ملازمین کے بھی کورونا ٹیسٹ کروائے جائیں گے۔

Share