ناموس رسالت اور ختم نبوت ہمارا ایمان ہے اس میں کوئی دوسری رائے نہیں: چودھری پرویزالٰہی

وزیراعظم نے ختم نبوت کے معاملے پر جراتمندانہ موقف اپنایا، وہ انٹرنیشنل فورم پر بھی بات کریں گے

ختم نبوت کے حوالے سے قانون سازی کا کریڈٹ سب سے پہلے پنجاب اسمبلی کو جاتا ہے جس میں تمام سیاسی جماعتوں کے علاوہ اقلیتی ارکان نے بھی ساتھ دیا: اسمبلی اجلاس میں اظہار خیال

حکومت نے شوگر فیکٹری کنٹرول ترمیمی بل، راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی، پنجاب لوکل گورنمنٹ ترمیمی بل 2021 سمیت دیگر بل بھی منظور کر وا لیے، اجلاس کل صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی

لاہور(04مئی2021) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے اسمبلی اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناموس رسالت اور ختم نبوت توہمارا ایمان ہے اس میں کوئی دوسری رائے نہیں، اس پر کسی قسم کے سمجھوتے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، وزیراعظم عمران خان نے ختم نبوت کے معاملے پر جراتمندانہ موقف اپنایا، انہوں نے او آئی سی کے سفیروں سے بھی بات کی اور انشاء اللہ انٹرنیشنل فورم پر بھی بات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ناموس رسالت اور ختم نبوت کے حوالے سے قانون سازی کا کریڈٹ سب سے پہلے پنجاب اسمبلی کو جاتا ہے جس میں تمام سیاسی جماعتوں کے علاوہ اقلیتی ارکان نے بھی ساتھ دیا، اس معاملے پر تمام سیاسی جماعتیں اکٹھی ہیں اور کوئی اختلاف نہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی میں کی گئی قانون سازی پر تمام اسمبلی ارکان کو کریڈٹ جاتا ہے جس میں لازم قرار دیا گیا کہ نصابی کتب میں جہاں پر حضور اکرمﷺ کا مبارک نام آئے گا انہیں اللہ کے آخری نبی لکھا جائے گا۔ دریں اثناء اسمبلی اجلاس کے دوران حکومت نے 11 نئے آرڈیننس اور دو نئے بل ایوان میں منظوری کیلئے پیش کیے جبکہ 8 نئے بل منظور کر لیے گئے۔ منظور کیے جانے والے بلوں میں شوگر فیکٹری کنٹرول کا ترمیمی بل، انفیکشن ڈیزیز (تدارک و بچاؤ)، راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی، پنجاب لوکل گورنمنٹ ترمیمی بل 2021، لاہور سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی بل 2021، ایمرسن یونیورسٹی ملتان، پنجاب لیٹرز آف ایڈمنسٹریشن اینڈ سکسیشن سرٹیفکیٹس بل اور پنجاب انفورسمنٹ آف ویمن پراپرٹی رائٹس بل 2021 منظور کروا لئے جبکہ یونیورسٹی آف چائلڈ ہیلتھ سائنسز بل اور پنجاب ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنز بل 2021 کے نام سے دو نئے بل متعارف کروائے گئے۔ سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے اسمبلی اجلاس کل صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کر دیا۔

Share