ن لیگ کے دور میں ایچ ای سی ایسا ادارہ بنا دیا گیا جس نے یونیورسٹیوں میں ایجوکیشن کے نظام کو مفلوج کر دیا: چودھری پرویزالٰہی

سپیکر پنجاب اسمبلی کی صوبے میں سرکاری یونیورسٹیوں میں چانسلرز کی من مانیوں اور غیر سنجیدہ رویے پر رولنگ، یونیورسٹیوں میں ایجوکیشن نظام کو تبدیل کرنے کی اشد ضرورت ہے

لاہور(05مئی2021) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے یونیورسٹیوں میں وائس چانسلرز کے اختیارات سے تجاوز پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا ہے کہ یونیورسٹی میں ایجوکیشن نظام کو تبدیل کرنے کی اشد ضرورت ہے، سابق دور حکومت میں بنائی گئی ایچ ای سی یونیورسٹیز کو چلنے نہیں دیتی ہے، اس نے یونیورسٹیز کیلئے صرف مشکلات کھڑی کیں ہیں۔ پنجاب اسمبلی کے اجلاس ایجوکیشن نظام پر بحث کے دوران سپیکر نے پنجاب میں سرکاری یونیورسٹیوں میں چانسلرز کی من مانیوں اور غیر سنجیدہ رویے پر رولنگ دیتے ہوئے کہا کہ ن لیگ کے دور حکومت میں ایچ ای سی ایسا ادارہ بنا دیا گیا جس نے یونیورسٹیوں میں ایجوکیشن کے نظام کو مفلوج کر دیا ہے۔ حکومتی رکن سید اکبر نوانی بولے وائس چانسلرز من مرضی کر رہے ہیں جنہیں کوئی پوچھنے والا نہیں ہے۔ پنجاب اسمبلی کے اجلاس کا ایجنڈا مکمل ہونے پر سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے اجلاس 6 مئی صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کر دیا۔

Share