جیلوں میں موجود خواتین قیدیوں کیلئے بریسٹ کینسر ٹیسٹ کو جلد یقینی بنایا جائے: چودھری پرویزالٰہی

پچھلے دس سالوں میں قیدیوں کی سہولیات میں کوئی بہتری نہیں آئی جو لمحہ فکریہ ہے، ساہیوال میں قیدیوں کیلئے 45بیڈ کے ہسپتال میں صحت کی سہولیات ناکافی ہیں

اللہ کرے چودھری پرویزالٰہی کا دور واپس آ جائے جو اس دور سے کروڑہا درجے بہتر تھا: ن لیگی رکن اسمبلی ملک ارشد

لاہور(06مئی2021) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ جیلوں میں موجود خواتین قیدیوں کیلئے بریسٹ کینسر ٹیسٹ کو جلد یقینی بنایا جائے، ساہیوال میں قیدیوں کیلئے 45بیڈ کے ہسپتال میں صحت کی سہولیات ناکافی ہیں، میں نے اپنے دور میں قیدیوں کا مینو خود بنایا مگر آج اس کی کوالٹی وہ نہیں رہی۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے دس سالوں میں جیلوں میں قیدیوں کی سہولیات میں کوئی بہتری نہیں آئی جو لمحہ فکریہ ہے، جیلوں کے ہسپتالوں میں ایکسرے اور سی ٹی سکین کی سہولت موجود نہیں۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ 1993ء میں جیل گیا تو وہاں ایک ہی ڈاکٹر ہرفن مولا تعینات تھا اس کے بعد میں نے اپنے دور میں جیل مینوئل میں اصلاحات کیں۔ سپیکر پنجاب اسمبلی نے صوبائی وزیر جیل خانہ جات فیاض الحسن چوہان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جتنا عرصہ آپ وزیر ہیں قیدیوں کی میڈیکل ا صلاحات میں اضافہ کر جائیں یہ کوئی مشکل کام نہیں۔ اجلاس کے دوران ن لیگی رکن اسمبلی ملک ارشد کو چودھری پرویزالٰہی کے دور کی یاد ستانے لگی۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کرے چودھری پرویزالٰہی کا دور واپس آ جائے، آپ کا دور آج کے دور سے کروڑہا درجے بہتر تھا۔ ایوان میں میاں شفیع محمد کی جانب سے مسودہ قانون نور انٹرنیشنل یونیورسٹی لاہور (ترمیمی بل) 2021 پیش کیا گیا جسے متفقہ طور پر منظور کر لیا گیا۔ بعد ازاں مفادعامہ سے متعلق قراردادیں پیش کی گئیں۔ ایجنڈا مکمل ہونے پر پنجاب اسمبلی کا اجلاس جمعتہ المبارک 07مئی صبح 9 بجے تک کیلئے ملتوی کر دیا گیا۔

Share