Wednesday , October 5 2022
Home / Featured / حکومت اب کام کر کے دکھائے، بہت وقت گزرگیا، آئین کے تحت کابینہ ہاؤس کو جوابدہ ہے تو بیوروکریسی کیوں نہیں: چودھری پرویزالٰہی

حکومت اب کام کر کے دکھائے، بہت وقت گزرگیا، آئین کے تحت کابینہ ہاؤس کو جوابدہ ہے تو بیوروکریسی کیوں نہیں: چودھری پرویزالٰہی

استحقاق بل2021ء دوبارہ متفقہ طور پر بھاری اکثریت سے منظور، تحریک انصاف، پاکستان مسلم لیگ، ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے ارکان نے بھرپور حصہ لیا

کوئی غلط فہمی میں نہ رہے تحفظ استحقاق بل قانون بن چکا ہے، اب کسی بیوروکریٹ کو ارکان اسمبلی کا استحقاق مجروح کرنے کی جرات نہیں ہو گی، ہمارے دور میں بنائی گئی ریسکیو 1122 سروس سے ہر خاص و عام مستفید ہو رہا ہے، چند بیوروکریٹس نے اپنی انا کی خاطر اس کے بل کو بھی روک کے پورے صوبے کا نقصان کیا: گورنر پنجاب کی جانب سے اعتراضات کے ساتھ واپس کیے جانے والے استحقاق بل کی دوبارہ منظوری کے بعد سپیکرچودھری پرویزالٰہی کا خطاب، ارکان اسمبلی کو مبارکباد

لاہور(03اگست2021) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی کی زیر صدارت آج پنجاب اسمبلی کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں اسمبلی نے گورنر کی جانب سے اعتراضات کے ساتھ واپس بھجوایا گیا استحقاق بل 2021ء ویسے ہی دوبارہ متفقہ طور پر بھاری اکثریت سے منظور کر لیا گیا۔ بل کی منظوری میں تحریک انصاف، پاکستان مسلم لیگ، ن لیگ اور پیپلزپارٹی سمیت تمام پارٹیوں کے ارکان نے بھرپور حصہ لیا۔ اس ترمیمی قانون کے ذریعے 1972ء کے اصل قانون میں ایک شیڈول کا اضافہ کیا گیاتھا۔ اس ترمیمی قانون پر صحافی برادری کو کچھ تحفظات تھے جس پر سپیکر نے ترمیمی قانون سے وہ شقیں ختم کر دی تھیں اور صحافیوں کے تمام مطالبات تسلیم کرتے ہوئے اس سلسلے میں نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا تھا تاہم بعد ازاں جب یہ بل گورنر پنجاب کو منظوری کیلئے دوبارہ بھجوایا گیا تو ان کی جانب سے اس بل پر تحفظات کا اظہار کر کے بل اعتراضات کے ساتھ اسمبلی کو واپس بھجوا دیا گیا۔ یہ بل آج دوبارہ منظوری کیلئے سپیکر کی اجازت سے رکن اسمبلی ساجد احمد خان بھٹی نے پیش کیا جسے ضروری کارروائی کے بعد اسمبلی نے اسے دوبارہ متفقہ طور پر بھاری اکثریت سے منظور کر لیا۔ سپیکر پنجاب اسمبلی نے تمام ارکان اسمبلی اور صوبے کی عوام کو استحقاق بل کی دوبارہ منظوری پر مبارکباد دی۔ سپیکرچودھری پرویزالٰہی نے ایوان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اب کام کر کے دکھائے، بہت وقت گزرگیا، آئین کے تحت کابینہ ہاؤس کو جواب دہ ہے تو بیوروکریسی کیوں نہیں، کوئی غلط فہمی میں نہ رہے تحفظ استحقاق بل قانون بن چکا ہے، اب کسی بیوروکریٹ کو ارکان اسمبلی کا استحقاق مجروح کرنے کی جرات نہیں ہو گی۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ ہمارے دور میں بنائی گئی ریسکیو 1122 سروس سے ہر خاص و عام مستفید ہو رہا ہے، چند بیوروکریٹس نے اپنی انا کی خاطر اس کے بل کو بھی روک کے پورے صوبے کا نقصان کیا۔ سپیکر نے کہا کہ گورنر کے اعتراضات کے بعد دوبارہ پاس ہونے والا استحقاق بل اب گورنر کے پاس جانے کی ضرورت نہیں ہے، اسمبلی خود ہی اس کا گزٹ نوٹیفکیشن کروائے گی۔ انہوں نے کہا کہ استحقاق بل پاس کر کے آپ نے ایک ایسا کام کیا ہے، جسے آئندہ نسلیں یاد رکھیں گی، تمام ارکان اسمبلی مبارکباد کے مستحق ہیں جس پر تمام ارکان اسمبلی نے ڈیسک بجا کر سپیکر کے اقدام کا خیر مقدم کیا۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ آئین کے تحت تمام کابینہ ایوان کو جوابدہ ہے تو بیوروکریسی کیوں نہیں؟ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنی گورننس ٹھیک کرے، حکومت اپنا کام کرے اور پارلیمنٹ کو اپنا کام کرنے دے۔ چودھری پرویزالٰہی نے ارکان اسمبلی سے کہا کہ آپ عوام کے حقوق کے محافظ ہیں اور آپ کے حقوق کی محافظ اسمبلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں بنائے ہوئے ایمرجنسی سروس ریسکیو 1122 سے ہر خاص و عام مستفید ہو رہا ہے اسمبلی نے اب اس محکمہ کا ایکٹ منظور کر کے اسے خود مختار ادارے کا درجہ دے دیا ہے لیکن چند بیوروکریٹس نے اپنی انا کی خاطر اسے بھی روک کر پورے صوبے کا نقصان کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ گوجرانوالہ میں پولیس بلاجواز ایک ایم پی اے کے گھر میں داخل ہوئی جبکہ ان کی والدہ بیمار تھیں لیکن پھر بھی پولیس نے ان کے گھر میں اودھم مچایا۔ سپیکر نے کہا کہ استحقاق بل میں ترمیم سے قبل میں نے ارکان اسمبلی سے ساتھ بیوروکریسی کے نارواں سلوک کے حوالے سے چیئرمین سینیٹ اور سپیکر قومی اسمبلی سے بھی رابطہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ بیوروکریٹس قومی اسمبلی استحقاق کمیٹی کے حکم پر دوڑے چلے آتے ہیں، وہ کسی ایم این اے سے ایسا رویہ نہیں رکھتے جیسا ایم پی اے کے ساتھ رکھتے ہیں۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ استحقاق بل کی منظوری کے بعد اب بیوروکریٹس کو اسمبلی کی طاقت کا اندازہ ہو گا، اب کسی بیوروکریٹ کو ارکان اسمبلی کا استحقاق مجروح کرنے کی جرات نہیں ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی بات نہیں کہ ہمارا استحقاق کمیٹی کا چیئرمین بھی بیوروکریٹس کے ہاتھوں اپنا استحقاق مجروح ہونے پر شکایت کر رہا ہے۔ سپیکر نے حکومتی ارکان سے مخاطب ہو کر کہا کہ اب حکومت، ارکان اسمبلی کو ڈلیور کرکے دکھائے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی نے آئین پاکستان کی روشنی میں ایکٹ کے ذریعے اپنے قوانین بنائے۔ اجلاس میں ارکان اسمبلی حسن مرتضیٰ، سمیع اللہ خان اور دیگر ارکان نے استحقاق بل کی منظوری میں خصوصی کاوشوں پر سپیکر چودھری پرویزالٰہی کو خراج تحسین پیش کیا۔ سپیکر نے اجلاس جمعہ 06اگست تک ملتوی کردیا۔

Check Also

Women parliamentarians call on CM Ch Parvez Elahi

Lahore, October 04: Chief Minister Punjab Chaudhry Parvez Elahi has said the political role of …

Leave a Reply

Your email address will not be published.