مری میں سیاحوں کی ہلاکت پر چودھری شجاعت حسین، پرویزالٰہی اور مونس الٰہی کا دلی رنج و غم کا اظہار

اس سانحہ کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کروا کر ذمہ داروں کو سخت سزا دی جائے، انتظامیہ وہاں پھنسے ہوئے جلد از جلد گھروں تک واپسی کیلئے موثر اقدامات کرے

لاہور(08جنوری2022) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین، سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی اور وفاقی وزیر برائے آبی وسائل مونس الٰہی نے مری میں پھنسے ہوئے سیاحوں کی ہلاکت پر دلی رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ غمزدہ خاندانوں کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ مسلم لیگی قائدین نے کہا کہ یہ بڑا المیہ ہے کہ برفباری انجوائے کرنے والے افراد شدید برفباری اور ٹریفک کی بدترین صورتحال کے باعث اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملہ کی اعلیٰ سطح پر تحقیقات ہونی چاہئے اور اگر انتظامیہ کی جانب سے کوئی غفلت سامنے آتی ہے تو اس پر تادیبی کارروائی کر کے سخت سزا دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اتنی بڑی تعداد میں لوگ مری کا رخ کر رہے ہیں انتظامیہ کو پتہ ہونا چاہئے تھا کہ وہاں حفاظتی اور ٹریفک کے انتظامات کیلئے کن اقدامات کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب تک بیس سے زائد افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے جو کہ انتہائی تکلیف دہ ہے اور ہر پاکستانی کیلئے رنج و غم کا باعث ہے۔ انہوں نے زور دیا کہ مری اور گلیات میں محصور سیاحوں اور پھنسی ہوئی گاڑیوں کو نکالنے کیلئے کوششیں تیز تر کی جائیں۔ اس سلسلہ میں انہوں نے پاک فوج، ایف سی اور ریسکیو 1122 کی کوششوں کو سراہتے ہوئے دعا کی کہ وہاں پھنسے ہوئے لوگوں کو جلد از جلد اپنے گھروں پر پہنچنا چاہئے کیونکہ ابھی تک بڑی تعداد میں لوگ مری اور ملحقہ علاقوں میں پھنسے ہوئے ہیں۔

Share