Wednesday , May 25 2022
Breaking News
Home / Featured / چاہے کچھ بھی کر لیں نوازشریف واپس نہیں آئیں گے، اگر ان کی پارٹی اور ورکر کہیں تو علیحدہ بات ہے: چودھری شجاعت حسین

چاہے کچھ بھی کر لیں نوازشریف واپس نہیں آئیں گے، اگر ان کی پارٹی اور ورکر کہیں تو علیحدہ بات ہے: چودھری شجاعت حسین

وہ لوگ جو خود وزیراعظم کے امیدوار ہیں وہ نوازشریف کی واپسی کا کہیں تو یہ نہایت مضحکہ خیز بات ہے، نوازشریف کی واپسی سے باہر نکلیں اور عوامی ایشوز کے حل پر توجہ دیں

یہ سال کام کرنے کا ہے لیکن اگر ایسے کاموں میں ہی لگے رہے تو پھر ملک کا اللہ ہی حافظ ہے، کوئی بھی پارٹی یا لیڈر مہنگائی کے خاتمے کیلئے پارلیمنٹ میں مثبت پلان دے تو اپنے ارکان کو کہوں گا کہ ان کی بات سنیں

لاہور(27جنوری2022) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ آج کل نوازشریف کے آنے جانے کی فکر لگی ہے، میری ذاتی رائے یہ ہے کہ چاہے کچھ بھی کر لیں نوازشریف واپس نہیں آئیں گے، اگر ان کی پارٹی اور ورکر کہیں تو علیحدہ بات ہے لیکن وہ لوگ جو خود وزیراعظم کے امیدوار ہیں وہ نوازشریف کی واپسی کا کہیں تو یہ نہایت مضحکہ خیز بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ جتنے پیسوں کا الزام نوازشریف پر ہے اس سے زیادہ تو ان کے کیسوں کے چکر میں خرچ کر دئیے گئے ہیں، ان کی واپسی کیلئے گارنٹی کی بات کرتے ہیں لیکن یہ خیال رکھیں کہ زندگی موت کی کوئی گارنٹی نہیں دے سکتا اس کا اختیار صرف اللہ تعالیٰ کے پاس ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ نوازشریف کی واپسی سے باہر نکلیں اور عوامی ایشوز کے حل پر توجہ دیں، یہ سال کام کرنے کا ہے لیکن اگر ایسے کاموں میں ہی لگے رہے تو پھر ملک کا اللہ ہی حافظ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج کل لیڈر ایک دوسرے کی ٹانگیں کھینچنے پر لگے ہیں جس کا عنقریب وہ انجام خود دیکھیں گے لیکن عوام کی کوئی بات نہیں کرتا، مہنگائی مہنگائی کا شور تو ہر طرف ہے لیکن اس کے خاتمے کیلئے کوئی تجویز نہیں دیتا۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ کوئی بھی پارٹی یا لیڈر مہنگائی کے خاتمے کیلئے پارلیمنٹ میں مثبت پلان دے تو میں اپنے تمام ارکان اسمبلی کو کہوں گا کہ ان کی بات سنیں۔

Check Also

Independence Long March is to strengthen democracy, economy and country: Ch Parvez Elahi

Nawaz Sharif, Shahbaz Sharif started every evil deed, those who recited Allama Iqbal’s poems in …

Leave a Reply

Your email address will not be published.