Saturday , August 13 2022
Breaking News
Home / Featured / لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ، چودھری پرویزالٰہی کی عمران خان اور قانونی ٹیم سے مشاورت، فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا جائے گا

لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ، چودھری پرویزالٰہی کی عمران خان اور قانونی ٹیم سے مشاورت، فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا جائے گا

تحریک انصاف کے پانچ ارکان حج اور چھ ارکان ضروری کام کے سلسلے میں بیرون ملک ہیں، ہائیکورٹ کے حکم کے باوجود تحریک انصاف کے پانچ ارکان کا الیکشن کمیشن نے ابھی تک نوٹیفکیشن نہیں کیا

لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے میں کئی آئینی اور قانونی ابہام موجود ہیں، سپریم کورٹ کے سامنے قانونی نکات رکھے جائیں گے: اجلاس میں فیصلہ

لاہور(30جون2022) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے لاہور ہائیکورٹ کے وزیراعلیٰ پنجاب کے الیکشن کے خلاف فیصلے کے بعد ویڈیو لنک پر تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور سینئر پارٹی قیادت سمیت قانونی ٹیم سے مشاورت کی ہے جس کے بعد فیصلہ کیا گیا کہ لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا جائے گا اور مشاورت سے آئندہ سیاسی و قانونی لائحہ عمل مرتب دیا جائے گا۔ اجلاس میں شاہ محمود قریشی، سینیٹر علی ظفر ایڈووکیٹ، سابق وفاقی وزیر مونس الٰہی، اسد عمر، ڈاکٹر بابر اعوان، فواد چودھری، عمر سرفراز چیمہ، عامر کیانی، فیصل چودھری ایڈووکیٹ، محمد بشارت راجہ، صمصام بخاری، غضنفر عباس چھینہ، حسین جہانیاں گردیزی، حافظ عمار یاسر اور سینئر وکلا شریک تھے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا جائے گا اس کیلئے قانونی پٹیشن کی تیاری شروع کر دی گئی ہے۔ اجلاس کے دوران بریفنگ دی گئی کہ تحریک انصاف کے پانچ ارکان حج کیلئے گئے ہیں، چھ ارکان ضروری کام کے سلسلے میں بیرون ملک ہیں، علاوہ ازیں لاہور ہائیکورٹ کے حکم کے باوجود تحریک انصاف کے پانچ ارکان کا الیکشن کمیشن نے ابھی تک نوٹیفکیشن نہیں کیا۔ اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے میں کئی آئینی اور قانونی ابہام موجود ہیں، سپریم کورٹ کے سامنے قانونی نکات رکھے جائیں گے۔

Check Also

PML CWC emergency meeting, Ch Shujat Hussain and Tariq Bashir Cheema were relieved from their posts

Under Article 118/119 of the party constitution, a committee has been established to hold elections …