Wednesday , October 5 2022
Home / Featured / وزیراعلیٰ پنجاب سے معروف عالم دین مولانا طارق جمیل کی ملاقات، علماء کرام ملک کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں: چودھری پرویزالٰہی

وزیراعلیٰ پنجاب سے معروف عالم دین مولانا طارق جمیل کی ملاقات، علماء کرام ملک کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں: چودھری پرویزالٰہی

سرکاری دفاتر میں دوپہر ایک سے دو بجے تک نماز ظہر کیلئے لازمی وقفہ ہو گا، نجی طور پر سودی کاروبارکرنیوالوں کیلئے دس سال تک کی سزا مقرر کی
الحمدللہ ہم نکاح نامے میں ختم نبوتﷺ کا حلف نامہ شامل کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی بدولت اب ہماری بچیوں کا مستقبل محفوظ ہے
انشاء اللہ آئندہ کسی بچی اور خاندان کے ساتھ دھوکہ نہیں ہوسکے گا، اللہ تعالیٰ نے ہمیں دین کی خدمت کی سعادت دی ہے جو ہم کرتے رہیں گے
لاہور 7 ستمبر: وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویزالٰہی سے آج وزیراعلیٰ آفس میں معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ پرویزالٰہی نے اس موقع پرگفتگو کرتے ہوئے کہا کہ علماء کرام ملک کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں، علماء کرام کی ملک وقوم کیلئے گراں قدر خدمات کو سراہتے ہیں، علماء کرام نے ہمیشہ اہم موقعوں پر قوم کی رہنمائی کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہم نے سرکاری دفاتر، وزیراعلیٰ آفس، گورنر ہاؤس اور دیگر اہم سرکاری مقامات کو آیت مبارکہ سے مزین کر دیا ہے، اب ہماری حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ پنجاب کے تمام سرکاری دفاتر میں دوپہر ایک سے دو بجے تک نماز ظہر کیلئے لازمی وقفہ ہو گا۔ انہو ں نے کہا کہ سود کے حوالے سے بھی ہم نے قانون سازی کی اور نجی طور پر سودی کاروبار کرنے والوں کیلئے 10 سال تک کی سزا مقرر کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ الحمدللہ ہم نکاح نامے میں ختم نبوتﷺ کا حلف نامہ شامل کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی بدولت اب ہماری بچیوں کا مستقبل محفوظ ہے، انشاء اللہ آئندہ کسی بچی اور خاندان کے ساتھ دھوکہ نہیں ہو سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے ہمیں دین کی خدمت کی سعادت دی ہے جو ہم کرتے رہیں گے۔ پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ محمد خان بھٹی، ایم پی اے حافظ عمار یاسر، راسخ الٰہی، یوسف جمیل، سابق صوبائی وزیرعبدالغفور میو، ڈاکٹر فیاض رانجھا، سابق پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ جی ایم سکندر اور متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

Check Also

Women parliamentarians call on CM Ch Parvez Elahi

Lahore, October 04: Chief Minister Punjab Chaudhry Parvez Elahi has said the political role of …